سؤروں کے حق میں ایک کہانی

اسد محمد خاں۔۔۔ بہت بلندی سے ایک پہاڑی اترتی ہے۔ جس طرح مسجدِ جامع کی دھلی دھلائی سیڑھیاں متانت کے ساتھ قاضیِ شہر کے پاپوش چومتی ہوئی، نیچے عامتہ الناس کی دھواں لپٹی دنیا میں اتر رہی ہوں۔ ٹھیک اسی طرح ای...

بیت

شاہ لطیف۔۔۔ پرديسان پنڌ ڪري هلي آيو هون اونچو تون عرش تي، آن ڀورو مٿي ڀون ڪئين تسندين تون، هي سر سوالي مڱڻو - بیجل رائے ڈیاچ سے کہتا ہے: اے راجہ! پردیس سے سعی کرتا تجھ تک پہنچا ہوں تیرا مقام عرش...